لاہور،مال روڈ پر واقع غلام رسول بلڈنگ عظمت رفتہ کھونے لگی

لاہورکا مال روڈاپنےقدیم طرزتعمیراورعمارات کی وجہ سے منفرد ہے۔ اس سڑک کنارے انگریز دور کی بنی ایک عمارت غلام رسول بلڈنگ بھی ہے جو اپنی عظمت رفتہ کھورہی ہے۔سفیدی میں لپٹی اس عمارت کولوگ کئی دہائیوں سے دیکھ رہے ہیں۔پرانے طرزکے بنے چھوٹے چھوٹے گنبد،لکڑی کی بنائی گئی سیڑھیاں اس عمارت کا خاصہ ہیں۔دفاتر اور کمرشل دکانوں سے بھری اس عمارت کو گزرے وقتوں میں نامور بک شاپ فیروز سنز کے نام سے بھی جانا جاتا تھاجوسال 2012 میں لگنے والی آگ کے بعد دوبارہ نہ کھل سکی ۔عمارت کی درودیوار اور چھتیں انگریزوں کے فن تعمیرکی یاد تو دلاتی ہیں مگراس اثاثےکوسنبھالنے میں کوتاہی کی جاتی رہی ہے۔ جگہ جگہ پڑی دراڑیں اور ٹوٹ پھوٹ اس کے مالک اور انتظامیہ کی غفلت کا نتیجہ ہے۔1922 میں بننے والی اس بلڈنگ کوایک صدی ہونے کو ہے۔گزشتہ سال اس کی خستہ حالی کی وجہ سے لاہورکی ضلعی انتظامیہ اسے خطرناک عمارتوں میں بھی شامل کرچکی ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں